منی لانڈرنگ ریفرنس میں حمزہ شہباز کی درخواست ضمانت سماعت کے لئے مقرر

لاہور ہائیکورٹ، جسٹس سردار محمد سرفراز ڈوگر اور جسٹس اسجد جاوید گھرال پر مشتمل دورکنی بنچ کل سماعت کرے گا. دورکنی بنچ حمزہ شہباز کی درخواست ضمانت پر ارجنٹ کیس کی حیثیت سے سماعت کرے گا، حمزہ شہباز کی جانب سے امجد پرویز ایڈوکیٹ دلائل دیں گے، درخواست میں چیئرمین نیب اور ڈی جی نیب کو فریق بنایا گیا ہے، نیب نے حمزہ شہباز کو آمدن سے زائد اثاثہ جات اور منی لانڈرنگ میں 11 جون 2019ء کو گرفتار کیا، درخواست میں موقف، حمزہ شہباز کی گرفتاری کے چودہ ماہ بعد ریفرنس دائر کیا گیا، درخواست میں موقف ، حمزہ شہباز کی گرفتاری کے سولہ ماہ بعد فرد جرم عائد کی گئی، موقف.
نیب کے آمدن سے زائد اثاثہ جات میں 16 ملزم نامزد اور 11 ملزموں کا ٹرائل ہو رہا ہے، حمزہ شہباز
تمام ملزمان کے اپنے اپنے وکلاء ہیں ٹرائل جلد ختم ہونے کا امکان نہیں ہے، حمزہ شہباز
کسی ملزم کو عرصہ دراز تک گرفتار رکھنا حتمی فیصلے سے پہلے سزا دینے کے مترادف ہے، درخواست میں موقف
عدالت حمزہ شہباز کی درخواست ضمانت منظور کرنے کا حکم دے، استدعا

اپنا تبصرہ بھیجیں