سپریم کورٹ سے خیبرپختونخوا حکومت کو بڑا ریلیف

اب نیب بی آر ٹی پشاور کی تحقیقات نہیں کر سکےگا، عدالت عظمیٰ نے پشاور ہائی کورٹ کا حکم کالعدم قرار دیدیا۔

بی آر ٹی منصوبے کی تحقیقات کے خلاف خیبرپختونخوا حکومت اور پشاور ڈویلپمنٹ اتھارٹی کی اپیلوں پر سماعت جسٹس عمر عطاء بندیال کی سربراہی میں تین رکنی بینچ نے کی۔ وکیل صوبائی حکومت نے دلائل میں پشاور ہائی کورٹ کا نیب کو تحقیقات کرنے کا فیصلہ کالعدم قرار دینے کی استدعا کی۔

جسٹس عمر عطاء بندیال نے ریمارکس دئیے کہ پشاور بی آر ٹی منصوبے پر لاگت سے زیادہ رقم خرچ کرنے کا الزام ہے، بی آر ٹی کنٹریکٹر کو بلیک لسٹ قرار دیا گیا تھا، عدالت نے صوبائی حکومت کی درخواست منظور کرتے ہوئے نیب کو تحقیقات روکنے کا حکم دے دیا۔

عدالت نے فیصلے میں قرار دیا کہ ہائی کورٹ کا فیصلہ قیاس آرائیوں پر مبنی تھا۔ عدالت نے صوبائی حکومت اور پشاور ڈویلپمنٹ اتھارٹی کی اپیلوں پر جاری حکم امتناع میں بھی توسیع کر دی اور ایف آئی اے کو آئندہ سماعت تک تحقیقات سے روک دیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں